0

لوگ کراچی سے کما کر امریکا ، کینیڈا ، یورپ چلے جاتے ہیں، چیف جسٹس


کراچی: چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد نے ریمارکس دیے ہیں کہ کراچی کو لاوارث چھوڑ دیا کوئی کام نہیں کرنا چاہتا، شہر تو کسی بھی وقت گر جائے گا، لوگ کراچی سے کماکر امریکا ، کینیڈا اور یورپ چلے جاتے ہیں۔چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے کراچی رجسٹری میں ضیا الدین اسپتال کلفٹن کی جانب سے رفاہی پلاٹ پر قبضہ کرکے پارکنگ بنانے کے کیس کی سماعت کی۔اسپتال کے وکیل انور منصور خان نے کہا کہ اسپتال نے کوئی قبضہ نہیں کیا، جو لوگ اسپتال آتے ہیں وہاں گاڑیاں کھڑی کرتے ہیں، اسپتال کے اردگرد قبضے ہیں، سڑکوں پر گھر بنا لیے گئے۔عدالت نے پوچھا کہ یہ بتائیں، سٹرک پر گھر کیسے بنے، یہ سب تیس سال کے اندر اندر ہوا، گلستان چلے جائیں، 90 فیصد کراچی گرے اسٹرکچر پر ہے، کراچی تو کسی بھی وقت گر جائے گا، دفتر میں صرف چائے پینے جاتے ہیں آپ لوگ، یہ ہے میٹرو پولیٹن سٹی؟۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں