0

اعتزاز احسن نے سابق چیف جج رانا شمیم کے بیان حلفی کو مشکوک قرار دے دیا


لاہور: سینیئر سیاستدان اور وکیل بیرسٹر اعتزاز احسن نے گلگت بلتستان کے سابق چیف جج رانا شمیم کے بیان حلفی کو مشکوک قرار دے دیا۔
لاہور ہائی کورٹ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی کے اعتزاز احسن نے کہا کہ رانا شمیم کا بیان حلفی بظاہر بالکل بوگس ہے، یہ بیان حلفی ماضی کے کیلبری فونٹ اور قطری خط جیسا معرکہ ہے، کوئی چیف جسٹس کھلے عام اس طرح کی ہدایات نہیں دے سکتے۔ جسٹس عمر فاروق صاحب نواز شریف اور مریم نواز کی اپیلوں پر سماعت کرنے والے بینچ میں شامل نہیں تھے اور اس وقت وہ ملک میں بھی نہیں تھے۔اعتزاز احسن نے کہا کہ اس میں کوئی شک کی بات نہیں ہونی چاہیے کہ رانا شمیم کے بیان حلفی کے پیچھے کون ہے۔ رانا شمیم کے بھائی 6 تاریخ کو فوت ہوئے اور وہ 8 تاریخ کو لندن میں بیان حلفی تیار کررہے تھے، لندن سے یہ بیان حلفی بنایا جاتا ہے، سب کو معلوم ہے کہ لندن نواز شریف کا گھر ہے، نواز شریف آج تک اپنی منی ٹریل تو دے نہیں سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں