0

آواز سنے بغیر بھی گفتگو سمجھنے والا اسمارٹ کیمرا


نیویارک: فون اور ایمیزون کے وائس اسسٹنٹ ایلسا اور سِری آواز سن کر ہماری مدد کرتے ہیں لیکن اب ایک بصری نظام کی بدولت کسی قسم کی آواز سنے بغیر بھی صرف ٹھوڑی کی حرکات سے معلوم کرسکتا ہے کہ درحقیقت کیا کہا جارہا ہے۔سری اور ایلکسا وغیرہ آواز سننے میں غلطی کرسکتے ہیں لیکن اب کورنیل یونیورسٹی کے سائنس دانوں نے ویڈیو کیمرے پر مبنی ایک سسٹم بنایا ہے جو مکمل طور پر ہینڈزفری ہے۔ اس سسٹم کا نام اسپی چِن رکھا گیا ہے جو درحقیقت ایک انفراریڈ کیمرا ہے۔کورنیل یونیورسٹی کے چینگ زینگ اور ان کے شاگرد رڈونگ زینگ کا کیمرا گلے میں پہنا جاتا ہے۔ یہ سینے کے اوپری حصے پر رہتے ہوئے ٹھوڑی اور اس کے نیچے کے عضلات کی حرکات کو نوٹ کرتا رہتا ہے۔ اب بولنے والا خواہ سرگوشی کرے یا پھر صرف ہونٹ ہلائے تب بھی وہ اسے محسوس کرلیتا ہے۔ٹھوڑی اور گلے کی حرکات کو پہلے ایک سافٹ ویئر دیکھتا ہے اور الگورتھم بتاتا ہے کہ خاموشی سے کیا الفاظ بولے گئے ہیں۔ اس کے بعد یہ ہدایات وہاں بھیجی جاسکتی ہیں جہاں اس کی ضرورت ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں