0

نیند کم کرنے والے جین دماغی بیماریوں سے بھی بچاتے ہیں، تحقیق


سان ڈیاگو: سائنسدانوں نے دریافت کیا ہے کہ رات میں صرف چار سے چھ گھنٹے سو کر تازہ دم ہوجانے والوں میں پائے جانے والے کچھ خاص جین نہ صرف نیند کی قدرتی ضرورت کم کرتے ہیں بلکہ ہیں ان پر تحقیق سے دماغی بیماریوں کا منفرد علاج ڈھونڈنے میں بھی مدد مل سکتی ہے۔اب تک کی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ روزانہ 7 گھنٹے سے کم اور 9 گھنٹے سے زیادہ نیند لینے والوں کو ان لوگوں کے مقابلے میں دماغی بیماریوں اور مسائل کا زیادہ سامنا ہوسکتا ہے جو روزانہ اوسطا 8 گھنٹے کی نیند لیتے ہیں۔البتہ، ان تحقیقات میں ایسے افراد بھی سامنے آئے جو پوری رات میں صرف 4 سے 6 گھنٹے کی نیند لے کر تازہ دم ہوجاتے ہیں جبکہ انہیں دماغی اور اعصابی بیماریوں کا سامنا بھی نہیں ہوتا۔ان لوگوں کو اشرافیہ خوابیدگان (elite sleepers) یعنی اعلی درجے کے سونے والے بھی کہا جاتا ہے۔ماضی میں کی گئی مختلف تحقیقات سے کم از کم 5 ایسے جین دریافت ہوچکے ہیں جن کی بدولت نیند کا قدرتی دورانیہ معمول سے بہت کم رہتا ہے، یعنی کم سونے پر بھی مکمل تازگی حاصل ہوتی ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں