0

ڈالر ایک بار پھر بلند ترین سطح پر پہنچ گیا، اسٹاک مارکیٹ شدید مندی کا شکار


کراچی: ملکی تاریخ میں ڈالر ایک بار پھر بلند ترین سطح پر پہنچ گیا جب کہ اسٹاک مارکیٹ شدید مندی کے بعد 43 ہزار کی نفسیاتی حد بھی کھوگئی۔ دس ماہ میں تجارتی خسارہ 65 فیصد بڑھ کر 39.3 ارب ڈالر تک پہنچنے، اپریل 2022 میں خام تیل کا درآمدی بل 72 فیصد کی ریکارڈ سطح تک پہنچنے سمیت ملک کو درپیش بدترین معاشی چیلینجز سے خوف زدہ سرمایہ کاروں کی جانب سے دھڑا دھڑ حصص کی فروخت اور غیریقینی سیاسی صورتحال کے باعث پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں پیر کو بھی مندی کا تسلسل برقرار رہا اور انڈیکس کی 43000 پوائنٹس کی نفسیاتی سطح بھی گرگئی۔مندی کے سبب 77.35 فیصد حصص کی قیمتیں گرگئیں جبکہ سرمایہ کاروں کے مزید ایک کھرب 23 ارب 17 کروڑ 72 لاکھ 29 ہزار 222 روپے ڈوب گئے۔ایک موقع پر مندی کی شدت 1113 پوائنٹس کی کمی تک پہنچ گئی تھی تاہم اختتامی لمحات میں نچلی قیمتوں پر حصص کی خریداری سرگرمیاں بڑھنے سے مندی کی شدت میں کمی واقع ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں