0

دسویں جماعت کی طالبہ بازیاب نہ ہوسکی، چیف جسٹس کا اظہار برہمی


لاہور ہائیکورٹ کے حکم کے باجود دسویں جماعت کی طالبہ بازیاب نہ ہوسکی جس پر چیف جسٹس نے برہمی کا اظہار کیا ہے۔ سماعت کے دوران آئی جی پنجاب نے طالبہ کی بازیابی کی مہلت مانگی جسے مسترد کردیا گیا۔ چیف جسٹس امیر بھٹی نے ریمارکس دیئے کہ اغواکار بچی آپکے ہاتھوں سے لیکر ساہیوال چلے گئے اور آپ کچھ نہ کر سکے۔ عدالت اس وقت اس لیے نہیں بیٹھی کہ آپ کو مہلت دے۔چیف جسٹس کا اپنے ریمارکس میں یہ بھی کہنا تھا کہ میں ابھی وزیراعظم کو کہتا ہوں آئی جی اور ڈی سی پی او کو ہٹایا جائے۔ آپکو اغواکاروں کیلئے تمام راستے بند کردینے چاہیے تھے۔ یہ میری بھی بچی ہے آپ کو بھی اپنی بچی سمجھنا چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں