0

قومی اسمبلی سے فنانس بل 23-2022 کثرت رائے منظور


اسلام آباد: قومی اسمبلی نے فنانس بل 23-2022 تمام ترامیم کے ساتھ کثرت رائے سے منظور کر لیا۔وزیرِ مملکت عائشہ غوث پاشا نے فنانس بل 23-2022 پیش کیا جبکہ قومی اسمبلی کے اسپیکر راجہ پرویز اشرف نے ایوان میں تحریک پیش کی جس کے بعد ایوان نے فنانس بل کی شق وار منظوری دے دی۔فنانس بل میں حکومت کی جانب سے 24 جون کو متعارف کرائی گئی ترامیم کو بھی شامل کیا گیا، بل میں متعارف کرائے گئے نئے اقدامات میں امیروں پر سپر ٹیکس اور بڑے صنعت کاروں کے لیے مقررہ ٹیکس شامل ہے۔منظور کردہ فنانس بل کے مطابق 15 کروڑ سے زائد آمدن کنندہ پر سپر ٹیکس عائد ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق 15 کروڑ سے زائد آمدن پر ایک فیصد، 20 کرڑ سے زائد آمدن پر 2 فیصد ہوگا۔ اس حوالے سے مزید بتایا گیا کہ ایسے افراد اور صنعتکار جو 25 کروڑ سے زائد سالانہ کما رہے ہیں ان پر 3 فیصد جبکہ سالانہ 30 کروڑ روپے سے زائد آمدن والوں پر 4 فیصد سپر ٹیکس عائد کیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں