0

زمین سے 30 لاکھ نوری سال کے فاصلے پر موجود تنہا کہکشاں


جیمز ویب اسپیس ٹیلی اسکوپ سے لی جانے والی تصویر (دائیں)، اسپٹزر ٹیلی اسکوپ سے لی جانے والی تصویر (بائیں) جیمز ویب اسپیس ٹیلی اسکوپ سے لی جانے والے وولف-لنڈ مارک-میلوٹے کہکشاں کی تصویر واشنگٹن: ناسا کی جیمز ویب اسپیس ٹیلی اسکوپ نے زمین سے 30 لاکھ نوری سال کے فاصلے پر موجود تنہا کہکشاں کی تصویر جاری کردی۔وولف-لنڈ مارک-میلوٹے نامی یہ ڈوارف گلیکسی 2016 میں صرف اسپِٹزر اسپیس ٹیلی اسکوپ سے دیکھی گئی تھی لیکن چونکہ اس میں نصب آلات جیمز ویب اسپیس ٹیلی اسکوپ جتنے جدید نہیں تھے اس لیے اس تصویر میں ستاروں کے دھدنلے نقوش آئے تھے۔جیمز ویب اسپیس ٹیلی اسکوپ کی طاقتور مکینکس کو استعمال کرتے ہوئے ناسا پر امید ہے کہ وہ اس کہکشاں کے ستاروں کی تخلیق کی تاریخ کو دوبارہ ترتیب دے سکے گی۔ اس کہکشاں کے متعلق ناسا کا خیال ہے کہ یہ اربوں سال قبل وجود میں آئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں